MENU Open Sub Menu

Poetry From Book "Shaam Ke Baad" By Farhat Abbas Shah

فرحت عباس شاہ کی کتاب 'شام کے بعد' سے تمام شاعری

Farhat Abbas Shah Poetry From Book Shaam Ke Baad

شام کے بعد

Shaam Ke Baad

اداسی کا کنارا بھی

Udaasi Ka Kinara Abhi

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

شہر برباد ہورہا ہے ابھی

Shehar Barbaad Ho Raha Hain Abhi

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

سب نے پوچھا درخت کیسا ہے

Sab Ne Poocha Darakht Kaisa Hain

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

شام کے درد سے جھولی بھرلی

Shaam De Dard Se Jholi Bhar Li

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

رات کی زلفوں میں جانے کیا ہے

Raat Ki Zulfoon Mein Jane Kia Hain

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

نہیں شام سفر ایسا نہیں ہے

Nahin Shaam E Safar Aisa Nahin Hain

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

محبت کا شجر مہنگا پڑا ہے

Muhabbat Ka Shajar Mehnga Para Hain

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

میں پوچھتا ہوں کہ یہ کاروبار کس کا ہے

Mein Puchtaa Hoon Keh Yeh Kaarobaar Kis Ka Hain

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

کبھی سفر تو کبھی شام لے گیا مجھ سے

Kabhi Safar To Kabhi Shaam Le Gya Mujh Se

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

ہوائیں لوٹ آئی ہیں اگرچہ میں سمجھتا تھا

Havaaen Lot Ayi Hain Agarche Mein Samajhtaa Tha

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

دل کسی یار باوفا کی طرح

Dil Kisi Yaar Bawafa Ki Tarah Bavafaa

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

بے قراری ہے ابھی

Beqarari Hain Abhi

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

اپنی خاطر ہی بنے ہیں تالے

Apni Khatir Hi Bane Hain Taale

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ

اب یہی آخری سہارا ہے

Ab Yehi Aakhri Sahara Hain

(Farhat Abbas Shah) فرحت عباس شاہ