Hamesha Ka Yeh Manzar Hai Ke Sehra Jal Raha Hai

ہمیشہ کا یہ منظر ہے کہ صحرا جل رہا ہے

ہمیشہ کا یہ منظر ہے کہ صحرا جل رہا ہے

پر اب حیرت تو اس پر ہے کہ دریا جل رہا ہے

تمہیں فرصت ہو جینے سے تو اپنے پار دیکھو

پس دیوار ایام اک زمانہ جل رہا ہے

ذرا سی دیر کو شانے سے اپنا سر ہٹا لے

ترے رخسار کے شعلوں سے شانہ جل رہا ہے

سفر کرنا ہے اگلی صبح اور گرمئ پا سے

مرے بستر کا سارا پائتانہ جل رہا ہے

پگھل کر گر رہے ہیں میرے سر پر چاند تارے

سنا ہے آسماں کا شامیانہ جل رہا ہے

فرحت احساس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1379) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farhat Ehsas, Hamesha Ka Yeh Manzar Hai Ke Sehra Jal Raha Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a , and the type of this Nazam is Urdu Poetry. Also there are 113 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farhat Ehsas.