Koi DhaRkan Koi Oljhan Koi Bandhan Mangay

کوئی دھڑکن کوئی الجھن کوئی بندھن مانگے

کوئی دھڑکن کوئی الجھن کوئی بندھن مانگے

ہر نفس اپنی کہانی میں نیا پن مانگے

دشت افکار میں ہم سے نئے موسم کا مزاج

بجلیاں تنکوں کی شعلوں کا نشیمن مانگے

رات بھر گلیوں میں یخ بستہ ہواؤں کی صدا

کسی کھڑکی کی سلگتی ہوئی چلمن مانگے

زہر سناٹے کا کب تک پئے صحرائے سکوت

ریت کا ذرہ بھی آواز کی دھڑکن مانگے

کالی راتوں کے جہنم میں بدن سوکھ گیا

دامن صبح کی ٹھنڈک کوئی برہن مانگے

حبس وہ ہے کہ نظاروں کا بھی دم گھٹتا ہے

کوئی سوندھی سی مہک اب مرا آنگن مانگے

زندگی جن کے تصادم سے ہے زخمی فرحتؔ

دل انہیں ٹوٹے ہوئے سپنوں کا درپن مانگے

فرحت قادری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(932) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farhat Qadri, Koi DhaRkan Koi Oljhan Koi Bandhan Mangay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 9 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farhat Qadri.