Kia Adoo Kia Dost Sab Ko Bha GaiN RuswaiaN

کیا عدو کیا دوست سب کو بھا گئیں رسوائیاں

کیا عدو کیا دوست سب کو بھا گئیں رسوائیاں

کون آ کر ناپتا احساس کی پہنائیاں

اب کسی موسم کی بے رحمی کا کوئی غم نہیں

ہم نے آنکھوں میں سجائی ہیں تری انگڑائیاں

آپ کیا آئے بہاروں کے دریچے کھل گئے

خوشبوؤں میں بس گئیں ترسی ہوئی تنہائیاں

اند بن کر کون اترا ہے قبائے جسم میں

جاگ اٹھی ہیں خیال و فکر کی گہرائیاں

دل پہ ہے چھایا ہوا بیدار خوابوں کا طلسم

ذہن کے آنگن میں لہراتی ہیں کچھ پرچھائیاں

آج فارغؔ اجڑے اجڑے سے ہیں غالبؔ کی طرح

یاد تھیں ہم کو بھی رنگا رنگ بزم آرائیاں

فارغ بخاری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1161) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farigh Bukhari, Kia Adoo Kia Dost Sab Ko Bha GaiN RuswaiaN in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farigh Bukhari.