Kitnay Shikway Gilay Hain Pehlay Hi

کتنے شکوے گلے ہیں پہلے ہی

کتنے شکوے گلے ہیں پہلے ہی

راہ میں فاصلے ہیں پہلے ہی

کچھ تلافی نگار فصل خزاں

ہم لٹے قافلے ہیں پہلے ہی

اور لے جائے گا کہاں گلچیں

سارے مقتل کھلے ہیں پہلے ہی

اب زباں کاٹنے کی رسم نہ ڈال

کہ یہاں لب سلے ہیں پہلے ہی

اور کس شئے کی ہے طلب فارغؔ

درد کے سلسلے ہیں پہلے ہی

فارغ بخاری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1451) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farigh Bukhari, Kitnay Shikway Gilay Hain Pehlay Hi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 43 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farigh Bukhari.