مشہور شاعر فرمان علی ارمان کی شاعری ۔ نظمیں اور غزلیں

ضرورتیں عجیب تھیں محبتیں عجیب تھیں

فرمان علی ارمان

یہ قربتوں میں دوریوں کا سال کیسے آگیا

فرمان علی ارمان

وہ چاند نگر کی شہزادی

فرمان علی ارمان

اُس حسن کو تھا حسنِ سُخن سے بھی لگاؤ

فرمان علی ارمان

تلخ سی اِک حقیقت ہے

فرمان علی ارمان

مرے تم خواب دیکھو ناں

فرمان علی ارمان

سنو جاناں۔۔!

فرمان علی ارمان

سسکیاں ، آنسو ہمارے ساتھ چلتے ہیں سدا

فرمان علی ارمان

مرے تم خواب دیکھو ناں

فرمان علی ارمان

میں تم پر نظم لکھوں گا

فرمان علی ارمان

کیا اسی کو نصیب کہتے ہیں

فرمان علی ارمان

کسی حسن کی بھی رفاقت نہیں ہے

فرمان علی ارمان

خِرَد کا رازداں ہو کر جُنوں بنیاد کرتا ہوں

فرمان علی ارمان

اُس حسیں ساتھ کا اِمکان نہیں رہ سکتا

فرمان علی ارمان

دل محبت میں گرفتار نہیں ہوتا ہے

فرمان علی ارمان

عشق تیرے ناز نخروں کو اُٹھاتا میں چلوں

فرمان علی ارمان

ہم سخن کوئی نہیں ہے رازداں کوئی نہیں

فرمان علی ارمان

دل محبت میں گرفتار نہیں ہوتا ہے

فرمان علی ارمان

دل چاہتا ہے اب مجھے بھی پیار ہو کوئی

فرمان علی ارمان

بگڑ کر پھر سنور جانا ضروری ہو گیا تھا

فرمان علی ارمان

عرصے سے ترے در پہ پڑا ہوں میں بھی

فرمان علی ارمان

حمد

فرمان علی ارمان