AndhioN Ka Khwab Adhora Reh Gaya

آندھیوں کا خواب ادھورا رہ گیا

آندھیوں کا خواب ادھورا رہ گیا

ہاتھ میں اک سوکھا پتا رہ گیا

شہر تو ثابت ہوا شہر خیال

آنکھ میں بس اک دھندلکا رہ گیا

آ گئے بارش کے دن دیوار پر

اک ذرا سا رنگ کچا رہ گیا

کھلکھلا کر دھوپ پیچھے ہٹ گئی

ہوتے ہوتے اک تماشا رہ گیا

راستے اک دوسرے میں کھو گئے

ہاتھ میں سڑکوں کا نقشا رہ گیا

اچھے اچھے سب کھلونے بک گئے

شام کا سنسان میلا رہ گیا

محفلوں کی بھی فضا معلوم ہے

کیا ہوا جو میں اکیلا رہ گیا

فاروق شفق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(415) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farooq Shafaq, AndhioN Ka Khwab Adhora Reh Gaya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farooq Shafaq.