Dunya Kia Hae Barf Ki Ik Almari Hae

دنیا کیا ہے برف کی اک الماری ہے

دنیا کیا ہے برف کی اک الماری ہے

ایک ٹھٹھرتی نیند سبھی پر طاری ہے

کہرا اوڑھے اونگھ رہے ہیں خستہ مکاں

آج کی شب بیمار دیوں پر بھاری ہے

سب کانوں میں اک جیسی سرگوشی سی

ایک ہی جیسا درد زباں پر جاری ہے

شام کی تقریبات میں حصہ لینا ہے

کچا رستہ دھول اٹی اک لاری ہے

گوری چٹی دھوپ بلائے جاڑے کی

وہ کیا جانے میری کیا دشواری ہے

فاروق شفق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(701) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farooq Shafaq, Dunya Kia Hae Barf Ki Ik Almari Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farooq Shafaq.