Koi Bhi Shakhs Na Gangama E MakaN MeiN Mila

کوئی بھی شخص نہ ہنگامۂ مکاں میں ملا

کوئی بھی شخص نہ ہنگامۂ مکاں میں ملا

ہر ایک جلتے ہوئے غم کے سائباں میں ملا

کوئی نہ ذہن میں صورت نہ کوئی خاکہ ہے

وہ مجھ سے جب بھی ملا ملگجے دھواں میں ملا

بیان کرنے پہ آؤں تو لفظ ٹوٹتے ہیں

وہ ایک عکس جو بجھتے ہوئے سماں میں ملا

وہ شے کہ جس نے دھواں دل میں میرے پھیلایا

نشان اس کا نہ کچھ دور تک دھواں میں ملا

سفر تمام ہوا اتنی خوش خرامی سے

تناؤ بھی نہیں کشتی کے بادباں میں ملا

ذرا یہ سوچ حقیقت بنا تو کیا ہوگا

وہ شائبہ جو مجھے سرحد گماں میں ملا

سنا ہے ہر گھڑی تو مسکراتا رہتا ہے

مجھے بھی جذب ذرا کر کے جسم و جاں میں ملا

ٹھہر سکے گا نہ ہر شخص زد پہ سوچا نہیں

وہ تیر چل گیا جو وقت کی کماں میں ملا

جو مجھ پہ میچ کرے میرا اپنا کہلائے

لباس ایسا نہ مجھ کو سجی دکاں میں ملا

فاروق شفق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(624) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farooq Shafaq, Koi Bhi Shakhs Na Gangama E MakaN MeiN Mila in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 18 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farooq Shafaq.