Yahan Tu Sirf Kapasoon K Rang Urne Lage

یہاں تو صرف کپاسوں کے رنگ اڑنے لگے

یہاں تو صرف کپاسوں کے رنگ اڑنے لگے

ادھر غلیظ مشینوں کے رنگ اڑنے لگے

غریب شخص کی شہرت حسد اگاتی ہے

کنول کھلا تو گلابوں کے رنگ اڑنے لگے

ہمارے پاؤں کے جھڑنے کی بات پھیل گئی

تمام شہر کی سڑکوں کے رنگ اڑنے لگے

جھلک رہی تھی کفن سے سفید کلکاری

بڑے بزرگوں کی قبروں کے رنگ اڑنے لگے

کئی لبوں کی عیادت کو ملتوی کر کے

وہ ہنس پڑا تو دلاسوں کے رنگ اڑنے لگے

دعا کو ہاتھ اٹھائے تو رزق آن گرا

پھر اس کے بعد جو کاسوں رنگ اڑنے لگے

فرزاد علی زیرک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(518) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farzad Ali Zeerak, Yahan Tu Sirf Kapasoon K Rang Urne Lage in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 12 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farzad Ali Zeerak.