Yeh Hum Ju Aaine Chamka Rahe Hain

یہ ہم جو آئنے چمکا رہے ہیں

یہ ہم جو آئنے چمکا رہے ہیں

کسی کھڑکی پہ کھلنے جا رہے ہیں

ہماری نیند گھٹتی جا رہی ہے

تمہارے خواب کس کو آ رہے ہیں

تماشا ختم ہونے جا رہا ہے

ہمارے سانپ ہم کو کھا رہے ہیں

ہمارے پاؤں کی رسی سے پوچھو

کہ ہم کیوں گردنیں کٹوا رہے ہیں

پرانی دشمنی تازہ ہوئی ہے

جو دریا دشت سے گھبرا رہے ہیں

وہی اک مسئلہ جو پہلے بھی تھا

اندھیرے سے دیے کترا رہے ہیں

فرزند علی زیرک

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(483) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Farzad Ali Zeerak, Yeh Hum Ju Aaine Chamka Rahe Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 12 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Farzad Ali Zeerak.