Moztarib Dil Ki Kahani Aor Hae

مضطرب دل کی کہانی اور ہے

مضطرب دل کی کہانی اور ہے

کوئی لیکن اس کا ثانی اور ہے

اس کی آنکھیں دیکھ کر ہم پر کھلا

یہ شعور حکمرانی اور ہے

یہ جو قاتل ہیں انہیں کچھ مت کہو

اس ستم کا کوئی بانی اور ہے

عمر بھر تم شاعری کرتے رہو

زخم دل کی ترجمانی اور ہے

حوصلہ ٹوٹے نہ راہ شوق میں

غم کی ایسی میزبانی اور ہے

مدعا اظہار سے کھلتا نہیں ہے

یہ زبان بے زبانی اور ہے

آئینے کے سامنے بیٹھا ہے کون

آج منظر پر جوانی اور ہے

فصیح اکمل

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1338) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fasih Akmal, Moztarib Dil Ki Kahani Aor Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 16 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fasih Akmal.