Gham Dunya Kay Yaad Jab AeN Os Ki Yaad Bhi Aanay Do

غم دنیا کے یاد جب آئیں اس کی یاد بھی آنے دو

غم دنیا کے یاد جب آئیں اس کی یاد بھی آنے دو

اک نشے میں اور اک نشہ اے یارو مل جانے دو

آخر ہم کو اپنے حال پہ خود رونا خود ہنسنا ہے

یارو اب کچھ دیر تو ٹھہرو تھوڑی تاب تو لانے دو

مرجھانے سے پہلے دل کو ایک ہنسی کی حسرت کیوں

بند کلی کو کچھ بھی نہیں تو ایک تبسم پانے دو

کس انمول پشیمانی کی دولت ہے ان آنکھوں میں

پلکوں پر دو آنسو جھمکیں موتی کے سے دانے دو

اس دلبر کو پیاس ہماری کچھ تسکین تو دیتی ہے

جس نے ہم پر کھول دئے ہیں آنکھوں کے مے خانے دو

ہم بھی اپنا ہوش گنوا کر سب کے جیسے ہو جائیں

کھل ہی گئی ہے جب بوتل تو بھر کے دو پیمانے دو

ف س اعجاز

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(691) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fay Seen Ejaz, Gham Dunya Kay Yaad Jab AeN Os Ki Yaad Bhi Aanay Do in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 24 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fay Seen Ejaz.