Idher Bhi Dekh Zara Beqarar Hum Bhi Hain

ادھر بھی دیکھ ذرا بے قرار ہم بھی ہیں

ادھر بھی دیکھ ذرا بے قرار ہم بھی ہیں

ترے فدائی ترے جاں نثار ہم بھی ہیں

بتو حقیر نہ سمجھو ہمیں خدا کے لیے

غریب بندۂ پرور دگار ہم بھی ہیں

کہاں کی توبہ یہ موقع ہے پھول اڑانے کا

چمن ہے ابر ہے ساقی ہے یار ہم بھی ہیں

مثال غنچہ ادھر خندہ زن ہے وہ گل تر

مثال ابر ادھر اشک بار ہم بھی ہیں

جگر نے دل سے کہا درد ہجر جاناں میں

کہ ایک تو ہی نہیں بے قرار ہم بھی ہیں

مدام سامنے غیروں کے بے نقاب رہے

اسی پہ کہتے ہو تم پردہ دار ہم بھی ہیں

ہمیں بھی دیجئے اپنی گلی میں تھوڑی جگہ

غریب بلکہ غریب الدیار ہم بھی ہیں

شگفتہ باغ سخن ہے ہمیں سے اے صابرؔ

جہاں میں مثل نسیم بہار ہم بھی ہیں

فضل حسین صابر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(489) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fazal Husain Sabir, Idher Bhi Dekh Zara Beqarar Hum Bhi Hain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fazal Husain Sabir.