Wo Saaf Rukh Pey Ju Zulf Siyah Fam Nahi

وہ صاف رخ پہ جو زلف سیاہ فام نہیں

وہ صاف رخ پہ جو زلف سیاہ فام نہیں

پتا یہ ہے کہ حلب کے قریب شام نہیں

تمہارے رخ سے کچھ اچھا مہ تمام نہیں

تمہارے قصر سے اونچا فلک کا بام نہیں

وہ کام لے کے بھی کہتے ہیں تجھ سے کام نہیں

سلام ایسی اطاعت کو میں غلام نہیں

کبھی ہے دشت نوردی کبھی ہیں گلشن میں

غرض جنوں میں ہمارا کہیں قیام نہیں

وہ شام وصل ہے اے ہم نشیں سحر جس کی

وہ صبح ہجر ہے اے دل کہ جس کی شام نہیں

ہوئی ہے اب تو انہیں لفظ لفظ سے نفرت

جواب خط میں کہیں داد صاد لام نہیں

شراب خانۂ دنیا میں اے بلانوشو

کسی کو ساغر مے کی طرح قیام نہیں

پلا دے مفت مجھے اے سخی کے لال شراب

غریب رند ہوں میری گرہ میں دام نہیں

ہزار عیب ہیں ہم میں مگر وہ ہے ستار

خدا کا شکر ہے بدنام اپنا نام نہیں

بس آج روز کا جھگڑا مٹا دے اے قاتل

عدو نہیں تری محفل میں یا غلام نہیں

ہزار کبک کو ہو ناز چال پر اپنی

مگر وہ آپ کے مانند خوش خرام نہیں

یہ کس کے پاؤں کے چھالے نے کر دیا سیراب

جو آج خار بیاباں بھی تشنہ کام نہیں

سوال وصل پر للہ آج ہاں کہہ دے

دہن سے تیرے نکلتا رہا مدام نہیں

دکھا کے ابروئے پر خم کہا یہ ظالم نے

کرے نہ چاک کلیجہ یہ وہ حسام نہیں

نہ صبح وصل کرو وعدہ شام کا صاحب

یہاں ہے شمع سحر آرزوئے شام نہیں

پیالہ دودھ کا گالوں کے سامنے ہے رکھا

وہ گال پر ترے زلف سیاہ فام نہیں

جناب شیخ بھی آ جائیں تو پلاؤں انہیں

یہ ماہ عید ہے صابرؔ مہ صیام نہیں

میں ان سے داد بھی لیتا نہیں ہوں اے صابرؔ

سمجھتے میرے سخن کو اگر عوام نہیں

فضل حسین صابر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(436) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fazal Husain Sabir, Wo Saaf Rukh Pey Ju Zulf Siyah Fam Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fazal Husain Sabir.