Kisi Ko Kab Woh Apny Dil Ka Kuchh Ahwaal Deta Hae

کسی کو کب وہ اپنے دل کا کچھ احوال دیتا ہے

کسی کو کب وہ اپنے دل کا کچھ احوال دیتا ہے

میں اس سے بات کرتا ہوں وہ مجھ کو ٹال دیتا ہے

کوئی تو ہے جو اس حیرت سرائے نور و ظلمت میں

ستارے کو ضیا آئینے کو تمثال دیتا ہے

بہت انکار کرتا ہے سوال وصل پر لیکن

خفا ہو جاؤں تو گردن میں بانہیں ڈال دیتا ہے

کوئی چہروں کا سوداگر چھپا ہے اس خرابے میں

پرانی صورتیں لے کر نئی اشکال دیتا ہے

میں جس لمحے گزرتے وقت کو محسوس کرتا ہوں

وہ اک لمحہ فراستؔ رنج ماہ و سال دیتا ہے

فراست رضوی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(624) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Frasat Rizvi, Kisi Ko Kab Woh Apny Dil Ka Kuchh Ahwaal Deta Hae in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 27 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Frasat Rizvi.