Bhoolay Bisray Hoay Gham Phir Obhar Aey HaiN Kai

بھولے بسرے ہوئے غم پھر ابھر آتے ہیں کئی

بھولے بسرے ہوئے غم پھر ابھر آتے ہیں کئی

آئینہ دیکھیں تو چہرے نظر آتے ہیں کئی

وہ بھی اک شام تھی جب ساتھ چھٹا تھا اس کا

واہمے دل میں سر شام در آتے ہیں کئی

پاؤں کی دھول بھی بن جاتی ہے دشمن اپنی

گھر سے نکلو تو پھر ایسے سفر آتے ہیں کئی

قریۂ جاں سے گزرنا بھی کچھ آسان نہیں

راہ میں جعفری شیشے کے گھر آتے ہیں کئی

فضیل جعفری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(236) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fuzail Jafry, Bhoolay Bisray Hoay Gham Phir Obhar Aey HaiN Kai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fuzail Jafry.