Khud Lafz Pas E Lafz Kabhi Dekh Skay Bhi

خود لفظ پس لفظ کبھی دیکھ سکے بھی

خود لفظ پس لفظ کبھی دیکھ سکے بھی

کاغذ کی یہ دیوار کسی طرح گرے بھی

کس درد سے روشن ہے سیہ خانۂ ہستی

سورج نظر آتا ہے ہمیں رات گئے بھی

وہ ہم کہ غرور صف اعدا شکنی تھے

آخر سر بازار ہوئے خوار بکے بھی

بہتی ہیں رگ و پے میں دو آبے کی ہوائیں

اک اور سمندر ہے سمندر سے پرے بھی

اخلاق و شرافت کا اندھیرا ہے وہ گھر میں

جلتے نہیں معصوم گناہوں کے دیے بھی

فضیل جعفری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(352) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fuzail Jafry, Khud Lafz Pas E Lafz Kabhi Dekh Skay Bhi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 32 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fuzail Jafry.