MENU Open Sub Menu

Subh Tak Hum Raat Ka Zaad E Safar Ho JaiN Ge

صبح تک ہم رات کا زاد سفر ہو جائیں گے

صبح تک ہم رات کا زاد سفر ہو جائیں گے

تجھ سے ہم آغوش ہو کر منتشر ہو جائیں گے

دھوپ صحرا تن برہنہ خواہشیں یادوں کے کھیت

شام آتے ہی غبار رہ گزار ہو جائیں گے

دشت تنہائی میں جینے کا سلیقہ سیکھئے

یہ شکستہ بام و در بھی ہم سفر ہو جائیں گے

شورش دنیا کو آہستہ روی کا حکم ہو

نذر خیر و شر ترے شوریدہ سر ہو جائیں گے

یہ جو ہیں دو چار شرفائے اودھ اختر شناس

کچھ دنوں میں یہ بھی اوراق دگر ہو جائیں گے

فضیل جعفری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(224) ووٹ وصول ہوئے

متعلقہ شاعری

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Fuzail Jafry, Subh Tak Hum Raat Ka Zaad E Safar Ho JaiN Ge in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 31 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Fuzail Jafry.