Qarya Herat Main Dil Ka Mstqr Ik Khawab Hai

قریۂ حیرت میں دل کا مستقر اک خواب ہے

قریۂ حیرت میں دل کا مستقر اک خواب ہے

یہ زمیں اک آئنہ ہے یہ نگر اک خواب ہے

تنگیٔ اوقات سے کھلتی ہے اک راہ نجات

وسعت امروز و فردا سے ادھر اک خواب ہے

ایک صبح نور ہے میرے ستارے کی نیام

اور مری بے تیغ آنکھوں کی سپر اک خواب ہے

یہ زمین و آسماں دونوں حقیقت ہیں مگر

خاک پر موجود ہونے کی خبر اک خواب ہے

سانس رکتا ہے تو گل ہوتی ہے شمع جستجو

رات بھر بیدار رہنے کا ثمر اک خواب ہے

ایک موج آب ہے اک عکس میں لپٹی ہوئی

ایک موج رنگ سے شیر و شکر اک خواب ہے

غلام حسین ساجد

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(395) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ghulam Hussain Sajid, Qarya Herat Main Dil Ka Mstqr Ik Khawab Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 88 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ghulam Hussain Sajid.