Ae Sitam Aazma Jfaa Kab Tak

اے ستم آزما جفا کب تک

اے ستم آزما جفا کب تک

کشتۂ زندگی وفا کب تک

گرمیٔ کوشش جفا کب تک

دعویٔ شہرت وفا کب تک

اے دل زہد خو ریا کب تک

نامرادانہ مدعا کب تک

ایک میں مل گیا خدا مارا

یوں نباہے گا دوسرا کب تک

امتحاں پر یہ امتحاں تا چند

آزما آزمائے گا کب تک

حسرت آئے گی دم میں سو سو بار

اے ہوس شور مرحبا کب تک

قدرت صبر عاقبت کتنی

جرأت طاقت آزما کب تک

تم سمجھ جاؤ میری خاموشی

نہ کہوں کہئے مدعا کب تک

کیجئے اب مرے نباہ کی فکر

یار صبر گریز پا کب تک

خواب میں بھی وہ آئیں گے تا چند

میں ملا بھی تو یوں ملا کب تک

دل میں کب تک تمہارے کھٹکوں گا

چشم دشمن میں میری جا کب تک

تندرستیٔ دل ہے بے جانی

درد بے درد کی دوا کب تک

ترک کی صاف اس نے گویائی

نرگس سرمہ سا خفا کب تک

اے دل بے قرار و بے آرام

نالہ تا چند تا کجا کب تک

اے قلقؔ وصل میں بھی ہوں ناشاد

طالع نارسا رسا کب تک

غلام مولیٰ قلق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(306) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of GHULAM MAULA QALAQ, Ae Sitam Aazma Jfaa Kab Tak in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 44 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of GHULAM MAULA QALAQ.