Nah Raha Shikwah Jfaa Nah Raha

نہ رہا شکوۂ جفا نہ رہا

نہ رہا شکوۂ جفا نہ رہا

ہو کے دشمن بھی آشنا نہ رہا

بے وفا جان و مال بے صرفہ

کیا رہا جب کہ دل ربا نہ رہا

سبھی اغیار ہیں سبھی عاشق

اعتماد اس کا ایک جا نہ رہا

خاک تھا جس چمن کی رنگ ارم

پتے پتے کا واں پتا نہ رہا

وصل میں کیا وصال مشکل تھا

یاد پر روز ہجر کا نہ رہا

خط مرا واں گیا گیا نہ گیا

سر قاصد رہا رہا نہ رہا

دل میں رہتا ہے کون غم کے سوا

کوئی اس گھر میں دوسرا نہ رہا

غیر اور شکوۂ جفا تم سے

ہائے میں قابل وفا نہ رہا

کیا ہوا کیوں قلقؔ کو روتے ہو

کوئی اس دہر میں سدا نہ رہا

غلام مولیٰ قلق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(263) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of GHULAM MAULA QALAQ, Nah Raha Shikwah Jfaa Nah Raha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 44 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of GHULAM MAULA QALAQ.