مشہور شاعر گلزار کی شاعری ۔ نظمیں اور غزلیں

کندھے جھک جاتے ہیں

گلزار

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

گلزار

کندھے جھک جاتے ہیں

گلزار

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

گلزار

کندھے جھک جاتے ہیں

گلزار

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

گلزار

کندھے جھک جاتے ہیں

گلزار

میں کھنڈروں کی زمیں پہ کب سے بھٹک رہا ہوں

گلزار

مجھ کو بھی ترکیب سکھا کوئی یار جلاہے

گلزار

جی میں آتا ہے کہ اس کان سے سوراخ کروں

گلزار

میرے کپڑوں میں ٹنگا ہے

گلزار

دور سنسان سے ساحل کے قریب

گلزار

ایک لڑھکی ہوئی وادی میں

گلزار

منظر! نرسنگ ہوم

گلزار

میں کائنات میں

گلزار

ایک لڑھکی ہوئی وادی میں

گلزار

منظر! نرسنگ ہوم

گلزار

میں کائنات میں

گلزار

بستہ پھینک کے لو جی بھاگا روشن آرا باغ کی جانب

گلزار

نظم الجھی ہوئی ہے سینے میں

گلزار

اپنی مرضی سے تو مذہب بھی نہیں اس نے چنا تھا

گلزار

Records 1 To 24 (Total 107 Records)