Kon Betaye Kon Sajhay Kon Se Dais Sudhar Gaye

کون بتائے کون سجھائے کون سے دیس سدھار گئے

کون بتائے کون سجھائے کون سے دیس سدھار گئے

ان کا رستہ تکتے تکتے نین ہمارے ہار گئے

کانٹوں کے دکھ سہنے میں تسکین بھی تھی آرام بھی تھا

ہنسنے والے بھولے بھالے پھول چمن کے مار گئے

ایک لگن کی بات ہے جیون ایک لگن ہی جیون ہے

پوچھ نہ کیا کھویا کیا پایا کیا جیتے کیا ہار گئے

آنے والی برکھا دیکھیں کیا دکھلائے آنکھوں کو

یہ برکھا برساتے دن تو بن پریتم بیکار گئے

جب بھی لوٹے پیار سے لوٹے پھول نہ پا کر گلشن میں

بھونرے امرت رس کی دھن میں پل پل سو سو بار گئے

ہم سے پوچھو ساحل والو کیا بیتی دکھیاروں پر

کھیون ہارے بیچ بھنور میں چھوڑ کے جب اس پار گئے

حبیب جالب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2472) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Habib Jalib, Kon Betaye Kon Sajhay Kon Se Dais Sudhar Gaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Habib Jalib.