Laeal Poor

لائل پور

لائل پور اک شہر ہے جس میں دل ہے مرا آباد

دھڑکن دھڑکن ساتھ رہے گی اس بستی کی یاد

میٹھے بولوں کی وہ نگری گیتوں کا سنسار

ہنستے بستے ہائے وہ رستے نغمہ ریز دیار

وہ گلیاں وہ پھول وہ کلیاں رنگ بھرے بازار

میں نے ان گلیوں پھولوں کلیوں سے کیا ہے پیار

برگ آوارہ میں بکھری ہے جس کی روداد

لائل پور اک شہر ہے جس میں دل ہے مرا آباد

کوئی نہیں تھا کام مجھے پھر بھی تھا کتنا کام

ان گلیوں میں پھرتے رہنا دن کو کرنا شام

گھر گھر میرے شعر کے چرچے گھر گھر میں بد نام

راتوں کو دہلیزوں پہ ہی کر لینا آرام

دکھ سہنے میں چپ رہنے میں دل تھا کتنا شاد

لائل پور اک شہر ہے جس میں دل ہے مرا آباد

میں نے اس نگری رہ کر کیا کیا گیت لکھے

جن کے کارن لوگوں کے من میں ہے میری پریت

ایک لگن کی بات ہے جیون کیسی ہار اور جیت

سب سے مجھ کو پیار ہے جالبؔ سب ہیں میرے میت

داد تو ان کی یاد ہے مجھ کو بھول گیا بے داد

لائل پور اک شہر ہے جس میں دل ہے مرا آباد

حبیب جالب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(2193) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Habib Jalib, Laeal Poor in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Habib Jalib.