Tu Rang Hai Gubhar Hain Teri Gali Ke Log

تو رنگ ہے غبار ہیں تیری گلی کے لوگ

تو رنگ ہے غبار ہیں تیری گلی کے لوگ

تو پھول ہے شرار ہیں تیری گلی کے لوگ

تو رونق حیات ہے تو حسن کائنات

اجڑا ہوا دیار ہیں تیری گلی کے لوگ

تو پیکر وفا ہے مجسم خلوص ہے

بدنام روزگار ہیں تیری گلی کے لوگ

روشن ترے جمال سے ہیں مہر و ماہ بھی

لیکن نظر پہ بار ہیں تیری گلی کے لوگ

دیکھو جو غور سے تو زمیں سے بھی پست ہیں

یوں آسماں شکار ہیں تیری گلی کے لوگ

پھر جا رہا ہوں تیرے تبسم کو لوٹ کر

ہر چند ہوشیار ہیں تیری گلی کے لوگ

کھو جائیں گے سحر کے اجالوں میں آخرش

شمع سر مزار ہیں تیری گلی کے لوگ

حبیب جالب

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(3203) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Habib Jalib, Tu Rang Hai Gubhar Hain Teri Gali Ke Log in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 76 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Habib Jalib.