Khoon Ban Kar Munasib Nahi Dil Bahay

خون بن کر مناسب نہیں دل بہے

خون بن کر مناسب نہیں دل بہے

دل نہیں مانتا کون دل سے کہے

تیری دنیا میں آئے بہت دن رہے

سکھ یہ پایا کہ ہم نے بہت دکھ سہے

بلبلیں گل کے آنسو نہیں چاٹتیں

ان کو اپنے ہی مرغوب ہیں چہچہے

عالم نزع میں سن رہا ہوں میں کیا

یہ عزیزوں کی چیخیں ہیں یا قہقہے

اس نئے حسن کی بھی اداؤں پہ ہم

مر مٹیں گے بشرطیکہ زندہ رہے

تم حفیظؔ اب گھسٹنے کی منزل میں ہو

دور ایام پہیہ ہے غم ہیں پہے

حفیظ جالندھری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(361) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hafeez Jalandhari, Khoon Ban Kar Munasib Nahi Dil Bahay in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 104 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hafeez Jalandhari.