Social Poetry of Hafeez Jalandhari - Social Shayari

حفیظ جالندھری کی معاشرتی شاعری

تیرے کوچے میں ہے سکوں ورنہ

Tairay Koochy Mein Hai Sakoo Warna

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

توبہ توبہ شیخ جی توبہ کا پھر کس کو خیال

Tuba Tuba Sheikh Jee Tuba Ka Phir Kis Ko Khayaal

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

تنہائی فراق میں امید بارہا

Tanhai Faraq Mein Umeed Barha

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

تیرے کوچے میں ہے سکوں ورنہ

Tairay Koochy Mein Hai Sakoo Warna

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

توبہ توبہ شیخ جی توبہ کا پھر کس کو خیال

Tuba Tuba Sheikh Jee Tuba Ka Phir Kis Ko Khayaal

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

تنہائی فراق میں امید بارہا

Tanhai Faraq Mein Umeed Barha

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

تصور میں بھی اب وہ بے نقاب آتے نہیں مجھ تک

Tasaweer Mein Bhi Ab Woh Be Naqaab Atay Nahi Mujh Tak

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

تصور میں بھی اب وہ بے نقاب آتے نہیں مجھ تک

Tasaweer Mein Bhi Ab Woh Be Naqaab Atay Nahi Mujh Tak

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

پھر دے کے خوشی ہم اسے ناشاد کریں کیوں

Phir Day Ke Khushi Hum Usay Nashad Karen Kyun

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

بھلائی نہیں جا سکیں گی یہ باتیں

Bhalai Nahi Ja Saken Gi Yeh Baatain

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

بظاہر سادگی سے مسکرا کر دیکھنے والو

Bzahir Sadgi Se Muskura Kar Dekhnay Walo

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

اہل زباں تو ہیں بہت کوئی نہیں ہے اہل دل

Ahal Zuba To Hain Bohat Koi Nahi Hai Ahal Dil

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

اٹھ اٹھ کے بیٹھ بیٹھ چکی گرد راہ کی

Uth Uth Ke Baith Baith Chuki Gird Raah Ki

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

او دل توڑ کے جانے والے دل کی بات بتاتا جا

O Dil Toar Ke Jaaney Walay Dil Ki Baat Batata Ja

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

ان تلخ آنسوؤں کو نہ یوں منہ بنا کے پی

Un Talkh Aanso-on Ko Nah Yun Mun Bana Ke Pi

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

الٰہی ایک غم روزگار کیا کم تھا

Ellahi Aik Gham Rozgaar Kya Kam Tha

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

اس کی صورت کو دیکھتا ہوں میں

Is Ki Soorat Ko Daikhta Hon Mein

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

ان تلخ آنسوؤں کو نہ یوں منہ بنا کے پی

Un Talkh Aanso-on Ko Nah Yun Mun Bana Ke Pi

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

الٰہی ایک غم روزگار کیا کم تھا

Ellahi Aik Gham Rozgaar Kya Kam Tha

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

اس کی صورت کو دیکھتا ہوں میں

Is Ki Soorat Ko Daikhta Hon Mein

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

ارادے باندھتا ہوں سوچتا ہوں توڑ دیتا ہوں

Iraday Bandhata Hon Sochta Hon Toar Deta Hon

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

احباب کا شکوہ کیا کیجئے خود ظاہر و باطن ایک نہیں

Ahbaab Ka Shikwah Kya Kijiyej Khud Zahir O Batin Aik Nahi

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

اتریں گے کس کے حلق سے یہ دل خراش گھونٹ

Utrain Ge Kis Ke Halaq Se Yeh Dil Kharaash Ghoont

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

ابھی میعاد باقی ہے ستم کی

Abhi Meyaad Baqi Hai Sitam Ki

(Hafeez Jalandhari) حفیظ جالندھری

Records 1 To 24 (Total 83 Records)

Social Shayari of Hafeez Jalandhari - Poetry of Social. Read the best collection of Social poetry by Hafeez Jalandhari, Read the famous Social poetry, and Social Shayari by the poet. Social Nazam and Social Ghazals of the poet. The best collection of Shayari by Hafeez Jalandhari online. You can also read different types of poetries by the poet including Social Shayari from different books of the poet.