Haye Wo Waqt E Judai Ke Hamare Ansu

ہائے وہ وقت جدائی کے ہمارے آنسو

ہائے وہ وقت جدائی کے ہمارے آنسو

گر کے دامن پہ بنے تھے جو ستارے آنسو

لعل و گوہر کے خزانے ہیں یہ سارے آنسو

کوئی آنکھوں سے چرا لے نہ تمہارے آنسو

ان کی آنکھوں میں جو آئیں تو ستارے آنسو

میری آنکھوں میں اگر ہوں تو بچارے آنسو

دامن صبر بھی ہاتھوں سے مرے چھوٹ گیا

اب تو آ پہنچے ہیں پلکوں کے کنارے آنسو

آپ للہ مری فکر نہ کیجے ہرگز

آ گئے ہیں یوں ہی بس شوق کے مارے آنسو

دو گھڑی درد نے آنکھوں میں بھی رہنے نہ دیا

ہم تو سمجھے تھے بنیں گے یہ سہارے آنسو

تو تو کہتا تھا نہ روئیں گے کبھی تیرے لیے

آج کیوں آ گئے پلکوں کے کنارے آنسو

آج تک ہم کو قلق ہے اسی رسوائی کا

بہہ گئے تھے جو بچھڑنے پہ ہمارے آنسو

میرے ٹھہرے ہوئے اشکوں کی حقیقت سمجھو

کر رہے ہیں کسی طوفاں کے اشارے آنسو

آج اشکوں پہ مرے تم کو ہنسی آتی ہے

تم تو کہتے تھے کبھی ان کو ستارے آنسو

اس قدر غم بھی نہ دے کچھ نہ رہے پاس مرے

ایسا لگتا ہے کہ بہہ جائیں گے سارے آنسو

دل کے جلنے کا اگر اب بھی یہ انداز رہا

پھر تو بن جائیں گے اک دن یہ شرارے آنسو

تم کو رم جھم کا نظارہ جو لگا ہے اب تک

ہم نے جلتے ہوئے آنکھوں سے گزارے آنسو

میرے ہونٹوں کو تو جنبش بھی نہ ہوگی لیکن

شدت غم سے جو گھبرا کے پکارے آنسو

میری فریاد سنی ہے نہ وہ دل موم ہوا

یوں ہی بہہ بہہ کے مرے آج یہ ہارے آنسو

ان کو ناصرؔ کبھی آنکھوں سے نہ گرنے دینا

میری آنکھوں میں انہیں لگتے ہیں پیارے آنسو

حکیم ناصر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(637) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hakeem Nasir, Haye Wo Waqt E Judai Ke Hamare Ansu in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hakeem Nasir.