Jab Bhi Jale Gi Shuma Tu Parwana Aaye Ga

جب بھی جلے گی شمع تو پروانہ آئے گا

جب بھی جلے گی شمع تو پروانہ آئے گا

دیوانہ لے کے جان کا نذرانہ آئے گا

تجھ کو بھلا کے لوں گا میں خود سے بھی انتقام

جب میرے ہاتھ میں کوئی پیمانہ آئے گا

آسان کس قدر ہے سمجھ لو مرا پتہ

بستی کے بعد پہلا جو ویرانہ آئے گا

اس کی گلی میں سر کی بھی لازم ہے احتیاط

پتھر اٹھا کے ہاتھ میں دیوانہ آئے گا

ناصرؔ جو پتھروں سے نوازا گیا ہوں میں

مرنے کے بعد پھولوں کا نذرانہ آئے گا

حکیم ناصر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(643) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hakeem Nasir, Jab Bhi Jale Gi Shuma Tu Parwana Aaye Ga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hakeem Nasir.