Meykashi Gardish E Ayam Se Aage Na Barhi

مےکشی گردش ایام سے آگے نہ بڑھی

مےکشی گردش ایام سے آگے نہ بڑھی

میری مدہوشی مرے جام سے آگے نہ بڑھی

دل کی حسرت دل ناکام سے آگے نہ بڑھی

زندگی موت کے پیغام سے آگے نہ بڑھی

وہ گئے گھر کے چراغوں کو بجھا کر میرے

پھر ملاقات مری شام سے آگے نہ بڑھی

رہ گئی گھٹ کے تمنا یوں ہی دل میں اے دوست

گفتگو اپنی ترے نام سے آگے نہ بڑھی

وہ مجھے چھوڑ کے اک شام گئے تھے ناصرؔ

زندگی اپنی اسی شام سے آگے نہ بڑھی

حکیم ناصر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(500) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hakeem Nasir, Meykashi Gardish E Ayam Se Aage Na Barhi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hakeem Nasir.