Hawa Hai Samne Ankhoon K Khandaan Abaad

ہوا ہے سامنے آنکھوں کے خانداں آباد

ہوا ہے سامنے آنکھوں کے خانداں آباد

مکان میں ہی ہوئے ہیں کئی مکاں آباد

تمہاری یاد میں آباد جسم و جاں میرے

تمہارے ذکر سے ہے میری داستاں آباد

اجڑ گئی ہے ہر اک سمت موسم گل میں

نہ باغباں ہے سلامت نہ گلستاں آباد

کوئی پیام نہ کوئی عطا پتا ان کا

کوئی بتائے کہاں پر ہیں رفتگاں آباد

عجیب جزو ہے یہ میرے جسم کا کہ یہاں

کہیں یقین ہے قائم کہیں گماں آباد

یہی دعا ہے مری اور یہی تمنا ہے

سدا رہے میری وادی یہاں وہاں آباد

کوئی بھی فیصلہ ہوگا نہیں رہے جب تک

تمہاری تیغ سلامت مری سناں آباد

ہمدم کاشمیری

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(422) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hamdam Kashmiri, Hawa Hai Samne Ankhoon K Khandaan Abaad in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 26 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hamdam Kashmiri.