Jeena Ka Ban Giya Hai Imkaan Zindagi Main

جینے کا بن گیا ہے امکان زندگی میں

جینے کا بن گیا ہے امکان زندگی میں

تم آ گئے ہماری ویران زندگی میں

ہر راستہ ہے اب تو آسان زندگی میں

شامل ہوا ہے جب سے قرآن زندگی میں

مرنے کے بعد اس کی مہلت نہیں ملے گی

کر آخرت کا پیارے سامان زندگی میں

پھر مل سکی نہ اس کو جائے پناہ کوئی

جس نے بھی کھو دئے ہیں اوسان زندگی میں

یہ کہہ کے اپنے دل کو دیتے ہیں ہم تسلی

پورے ہوئے ہیں کس کے ارمان زندگی میں

کچھ ایسے لوگ بھی ہیں دنیا میں تیری یارب

لیتے نہیں کسی کا احسان زندگی میں

عادت سی بن گئی ہے اب تو حنیف راہیؔ

جھیلے ہیں جانے کتنے طوفان زندگی میں

حنیف راہی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(775) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Haneef Rahi, Jeena Ka Ban Giya Hai Imkaan Zindagi Main in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 9 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Haneef Rahi.