Raat K Dar Pey Dastak Yeh Musalsal Dastak

رات کے در پہ یہ دستک یہ مسلسل دستک

رات کے در پہ یہ دستک یہ مسلسل دستک

آمد صبح فروزاں کا پتا دیتی ہے

پھونک ڈالے گی یہ اک روز قبائے صیاد

آتش گل کو صبا اور ہوا دیتی ہے

تیرگی زادوں سے کب نور کا سیلاب تھمے

فیصلہ وقت کا تاریخ سنا دیتی ہے

آنچ آتی ہے ستاروں سے جو کچھ پچھلے پہر

خواب شیریں سے نگاروں کو جگا دیتی ہے

کتنی نادیدہ بہاروں کی تمنائے جواں

دامن جاں میں مرے آگ لگا دیتی ہے

سینۂ سنگ میں بیتاب ہے وہ کاوش شوق

جو حقیقت کو بھی خوابوں کی ضیا دیتی ہے

شمع محراب وفا بن کے حیات‌ رسوا

دل نگاری کا مری کچھ تو صلا دیتی ہے

حنیف فوق

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(645) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hanif Fouq, Raat K Dar Pey Dastak Yeh Musalsal Dastak in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 11 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hanif Fouq.