Karam Kar Day Mula Raham Kardey Mula

کرم کر دے مولارحم کردے مولا

کرم کر دے مولارحم کردے مولا

کے مجھ پہ تو اپنا کرم کر دے مولا

جو بن باپ مولا جہاں میں ہیں پھرتے

جو بن ماں کے راہوں میں پھرتے سسکتے

کوئی ان کو بھی تھام لے میرے مولا

کوئی ان کا بھی آسرا میرے مولا

ہوں در در پہ مولا میں پھرتا بھٹکتا

جہاں تک پہنچ تھی وہیں تک ہوں بھٹکا

نہیں تیرے در سا کوئی در بھی مولا

ہدایت ملے گی اسی در سے مولا

ہر ایک رستا چلا ہوں میں جس پے

اسی کے تھی آخر میں رسوائی میری

چلا مجھ کو اپنے ہی رستے پہ مولا

جو لے جائے تجھ تک مجھے میرے مولا

یہ سانسوں کا میری جو ہے آنا جانا

کرم ہے یہ تیرا اور ہے مہربانی

لہو میں جو گردش ایمانی باقی

اسے مجھ میں اب تو بڑھا میرے مولا

ہے خواہش کا بہتا ہوا اک سمندر

ہر ایک اس میں لہو کا سوداگر

تمنا تو ”حارث “ یہ کرتا ہے ہر پل

مجھے اپنی پناہ میں تو لے میرے مولا

حارث منیر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1094) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Haris Muneer, Karam Kar Day Mula Raham Kardey Mula in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Hamd, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 2 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Haris Muneer.