Miyar Zamana

معیار زمانہ

ہے ظلم و ستم ہی کے ہر سو اندھیرے

اندھیروں کے ساتھی ہیں رہبر بھی میرے

کیا جس نے بے لوث خدمت کا دعوا

اسی کے تھے بغض و عداوت کے چرچے

جو رسم و رواجوں سے بیزار ہو کر

زمانہ کے ہا تھوں سے بھی خوار ہو کر

ہوا ٓ شنا ہوں کے جینا ہے کیسے

ملی آگہی ہے کے مرنا ہے کیسے

ہیں عشق و محبت کے اطوار بدلے

خوشی اور غمی کے ہیں تہوار بدلے

یہ الجھن یہ سلجھن کا ہے جو تماشہ

اسے نسل انسانی سے آزادی دے دے

ہر ایک سمجھے کے وہ سب سے بہتر

وہی سب سے اعلی وہی سب سے افضل

مگر گردش ایام یہ کہتے ہیں ”حارث“

حوادث ہی جانیں یہ ہوتا ہے کیونکر

حارث منیر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(373) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Haris Muneer, Miyar Zamana in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 2 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Haris Muneer.