Dar Pey Hain Loog Yun Meri Laghar Si Jaan Ke

در پے ہیں لوگ یوں مری لاغر سی جان کے

در پے ہیں لوگ یوں مری لاغر سی جان کے

کتے ہوں جیسے آہ مرے استخوان کے

زاہد سنبھالیے یہاں دستار معتبر

بچے شریر ہوتے ہیں پیر مغان کے

اک چاند ہے کہ جان نہ پایا ہمیں کبھی

تارے تو ورنہ جانتے ہیں آسمان کے

تارے تو ہم سمجھتے ہیں خود کو یہاں مگر

مٹی کے پتلے ہیں سبھی ہم خاکدان کے

حاویؔ کے میں کلام کی تعریف کیا کروں

خادم ہیں بس جناب وہ اردو زبان کے

حاوی مومن آبادی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(270) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Havi Momin Abadi, Dar Pey Hain Loog Yun Meri Laghar Si Jaan Ke in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 13 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Havi Momin Abadi.