Bina Seher K Ujale Mujhe Qabool Nahi

بنا سحر کے اجالے مجھے قبول نہیں

بنا سحر کے اجالے مجھے قبول نہیں

ترے یہ جھوٹے دلاسے مجھے قبول نہیں

نہ تو مداری ہے نہ میں ترا جمورا ہوں

یہ آئے دن کے تماشے مجھے قبول نہیں

بڑھا کے ہاتھ کو تم نے مجھے گرایا ہے

اگر یہی ہیں سہارے مجھے قبول نہیں

کسی کے ذہن کی جو کھڑکیاں نہ کھول سکیں

تو ایسے علم کے دعوے مجھے قبول نہیں

جو میرے دل پہ ہے گزری وہی اگر نہ کہو

تو باقی شور شرابے مجھے قبول نہیں

ہو ظلم عام جہاں پر جہاں نہ حق پہنچے

یہ بھولے بھٹکے زمانے مجھے قبول نہیں

حنا عباس

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1204) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Hina Abbas, Bina Seher K Ujale Mujhe Qabool Nahi in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 10 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.7 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Hina Abbas.