Tahayar Ishq

تحیر عشق

بہ مشکل ایک حیرانی کو

آنکھوں سے نکالا تھا

کہ پھر اک اور حیرانی

یہ بستی کیسی بستی ہے جہاں پر

میرا ہر اک خواب

حیرانی کی اک چادر کو اوڑھ

سو رہا ہے

اور تحیر کی قبا پہنے ہوئے ہیں

اشک سارے

اور یہاں تک کہ ہمارے عشق نے بھی

ہجر کے اک سنگ پر جو لفظ لکھا ہے

وہ حیرت ہے

وہی اک لفظ جو اب میرے دل کے

آئینے سے برسر پیکار ہے

اور کون جانے

آئینہ باقی رہے گا

یا ہمارے عشق کی حیرت

حمیرا راحت

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(430) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Humaira Rahat, Tahayar Ishq in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Nazam, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 5 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Humaira Rahat.