Kuch Kehnay Ka Waqt Nahi Yeh Kuch Nah Kaho Khamosh Raho

کچھ کہنے کا وقت نہیں یہ کچھ نہ کہو خاموش رہو

کچھ کہنے کا وقت نہیں یہ کچھ نہ کہو خاموش رہو

اے لوگو خاموش رہو ہاں اے لوگو خاموش رہو

سچ اچھا پر اس کے جلو میں زہر کا ہے اک پیالہ بھی

پاگل ہو کیوں ناحق کو سقراط بنو خاموش رہو

ان کا یہ کہنا سورج ہی دھرتی کے پھیرے کرتا ہے

سر آنکھوں پر سورج ہی کو گھومنے دو خاموش رہو

محبس میں کچھ حبس ہے اور زنجیر کا آہن چبھتا ہے

پھر سوچو ہاں پھر سوچو ہاں پھر سوچو خاموش رہو

گرم آنسو اور ٹھنڈی آہیں من میں کیا کیا موسم ہیں

اس بگیا کے بھید نہ کھولو سیر کرو خاموش رہو

آنکھیں موند کنارے بیٹھو من کے رکھو بند کواڑ

انشاؔ جی لو دھاگا لو اور لب سی لو خاموش رہو

ابن انشا

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(708) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ibne Insha, Kuch Kehnay Ka Waqt Nahi Yeh Kuch Nah Kaho Khamosh Raho in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 37 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.4 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ibne Insha.