Ab Bhi Toheen E Ataat Nahi Hoon Gi Hum Se

اب بھی توہینِ اطاعت نہیں ہو گی ہم سے

اب بھی توہینِ اطاعت نہیں ہو گی ہم سے

دل نہیں ہو گا تو بیعت نہیں ہو گی ہم سے

روز اک تازہ قصیدہ نئی تشبیب کے ساتھ

رزق برحق ہے یہ خدمت نہیں ہو گی ہم سے

دل کے معبود جبینوں کے خداؤں سے الگ

ایسے عالم میں عبادت نہیں ہو گی ہم سے

اجرت عشق وفا ہے تو ہم ایسے مزدور

کچھ بھی کر لیں گے یہ محنت نہیں ہو گی ہم سے

ہر نئی نسل کو اک تازہ مدینے کی تلاش

صاحبو!اب کوئی ہجرت نہیں ہو گی ہم سے

سخن آرائی کی صورت تو نکل سکتی ہے

پر یہ چکی کی مشقت نہیں ہو گی ہم سے

افتخار عارف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(254) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Iftikhar Arif, Ab Bhi Toheen E Ataat Nahi Hoon Gi Hum Se in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 108 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Iftikhar Arif.