Aik Or Taziyana Manzar Laga Hamain

ایک اور تازیانہ منظر لگا ہمیں

ایک اور تازیانہ منظر لگا ہمیں

آ اے ہوائے تازہ! نئے پر لگا ہمیں

ندی چڑھی ہوئی تھی تو ہم بھی تھے موج میں

پانی اُتر گیا تو بہت ڈر لگا ہمیں

دل پر یقیں نہیں تھا سو اب کے محاذ پر

دُشمن کا اک سوار بھی لشکر لگا ہمیں

گڑیوں سے کھیلتی ہوئی بچی کی آنکھ میں

آنسو بھی آگیا تو سمندر لگا ہمیں

بیٹا گرا جو چھت سے پتنگوں کے پھیر میں

کُل آسماں پتنگ برابر لگا ہمیں

دادِ متاعِ عجز کہ تقدیر میں نہ تھی

الزام خود سری تھا کہ اُڑ کر لگا ہمیں

افتخار عارف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(229) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Iftikhar Arif, Aik Or Taziyana Manzar Laga Hamain in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 108 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Iftikhar Arif.