Samandar Is Qader Shorida Sir Kyun Lag Raha Hai

سمندر اس قدر شوریدہ سر کیوں لگ رہا ہے

سمندر اس قدر شوریدہ سر کیوں لگ رہا ہے

کنارے پر بھی ہم کو اتنا ڈر کیوں لگ رہا ہے

وہ جس کی جرأت پرواز کے چرچے بہت تھے

وہی طائر ہمیں بے بال و پر کیوں لگ رہا ہے

وہ جس کے نام سے روشن تھے مستقبل کے سب خواب

وہی چہرہ ہمیں نا معتبر کیوں لگ رہا ہے

بہاریں جس کی شاخوں سے گواہی مانگتی تھیں

وہی موسم ہمیں اب بے ثمر کیوں لگ رہا ہے

در و دیوار اتنے اجنبی کیوں لگ رہے ہیں

خود اپنے گھر میں آخر اتنا ڈر کیوں لگ رہا ہے

افتخار عارف

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(341) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Iftikhar Arif, Samandar Is Qader Shorida Sir Kyun Lag Raha Hai in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad, Social Urdu Poetry. Also there are 84 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.3 out of 5 stars. Read the Sad, Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Iftikhar Arif.