Hamara Aaynh Be Car Ho Gaya To Phir !

ہمارا آئنہ بے کار ہو گیا تو پھر!

ہمارا آئنہ بے کار ہو گیا تو پھر!

تمہارا حسن طرحدار ہو گیا تو پھر!

ملا کے خاک میں وہ سوچتا رہا برسوں

میں آئنے میں نمودار ہو گیا تو پھر!

رکاوٹیں تو سفر کا جواز ہوتی ہیں

یہ راستہ کہیں ہموار ہو گیا تو پھر!

وہ ماہتاب ہے، میں جھیل اور سفر درپیش

وہ مجھ سے ہوتا ہوا پار ہو گیا تو پھر!

تمام شہر نے لوٹا دیا ہے خالی ہاتھ

اور اس کے در سے بھی انکار ہو گیا تو پھر!

تو کیوں نہ راستہ تبدیل کر لیا جائے

کہیں جو مجھ سے تمہیں پیار ہو گیا تو پھر!

الیاس بابر اعوان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(516) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ilyas Babar Awan, Hamara Aaynh Be Car Ho Gaya To Phir ! in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ilyas Babar Awan.