Mera Our Phoolon Ka Rishta Toot Gaya

میرا اور پھولوں کا رشتہ ٹوٹ گیا

میرا اور پھولوں کا رشتہ ٹوٹ گیا

کھڑکی بند ہوئی اور سپنا ٹوٹ گیا

چڑیاں کب آنکھوں سے باتیں کرتی ہیں

صبح ہوئی گھر کا سناٹا ٹوٹ گیا

باغ کی ویرانی کا عینی شاہد ہوں

تنہائی کے بوجھ سے جھولا ٹوٹ گیا

آج بھی میرا ہاتھ پکڑ کر گھومے گی

آج پھر اس لڑکی کا چشمہ ٹوٹ گیا

پیڑ اور دل میں کوئی خاص تعلق ہے

ہوا چلی اور آخری پتا ٹوٹ گیا

الیاس بابر اعوان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(727) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ilyas Babar Awan, Mera Our Phoolon Ka Rishta Toot Gaya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.1 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ilyas Babar Awan.