Nah Jane Kon Taray Kakh O Ko Main Aaye Ga

نہ جانے کون ترے کاخ و کو میں آئے گا

نہ جانے کون ترے کاخ و کو میں آئے گا

جو آئے گا وہ مری آرزو میں آئے گا

میں جانتا ہوں مرے بعد میرے مرقد پر

کوئی غبار مری جستجو میں آئے گا

یہی تو سوچ کے جلتے ہیں مسجدوں کے چراغ

درون شب یہاں کوئی وضو میں آئے گا

ترے خیال کی لو سے چمک اٹھے ہیں حروف

ابھی تو تو مرے حرف نمو میں آئے گا

مجھے خدا سے ذرا ہم کلام ہونے دو

تمہارا ذکر بھی اس گفتگو میں آئے گا

الیاس بابر اعوان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(424) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Ilyas Babar Awan, Nah Jane Kon Taray Kakh O Ko Main Aaye Ga in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Social Urdu Poetry. Also there are 34 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.9 out of 5 stars. Read the Social poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Ilyas Babar Awan.