Nashe Main Yeh Kiya Samjh Liya Tha

نشے میں یہ کیا سمجھ لیا تھا

نشے میں یہ کیا سمجھ لیا تھا

خدا کو بندہ سمجھ لیا تھا

ذرا سی چپ تھی اسی کو تم نے

نہ جانے کیا کیا سمجھ لیا تھا

حسیں تھا وہ اس قدر کہ ہم نے

نظر کا دھوکا سمجھ لیا تھا

میں ایسا پاگل دیا تھا جس نے

ہوا کو اپنا سمجھ لیا تھا

ہم اس کے دل تک پہنچتے کیسے

بدن کو راستہ سمجھ لیا تھا

اسے یوں چھوڑا کہ اس نے ہم کو

بہت زیادہ سمجھ لیا تھا

ہم اپنی غلطی سے بک گئے ہیں

تمہیں زلیخا سمجھ لیا تھا

ہماری سادہ دلی تو دیکھو

خدا کو اپنا سمجھ لیا تھا

ملن جدائی تڑپ اداسی

یہ کھیل سارا سمجھ لیا تھا

تمہاری آنکھیں سمجھ نہ پائے

ہر اک معمہ سمجھ لیا تھا

لب اس نے کھولے نہیں تھے پھر بھی

جواب اس کا سمجھ لیا تھا

وہ آنکھیں کعبہ صفت تھی جن کو

شراب خانہ سمجھ لیا تھا

امتیاز خان

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(984) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Imtiyaz Khan, Nashe Main Yeh Kiya Samjh Liya Tha in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 14 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.8 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Imtiyaz Khan.