Bas Ho Chuka Huzoor Yeh Parday

بس ہو چکا حضور یہ پردے ہٹائیے

بس ہو چکا حضور یہ پردے ہٹائیے

سب منتظر ہیں سامنے تشریف لائیے

آواز میں تو آپ کی بے شک خلوص ہے

لیکن ذرا نقاب تو رخ سے ہٹائیے

ہم مانتے ہیں آپ بڑے غم گسار ہیں

لیکن یہ آستین میں کیا ہے دکھائیے

اب قافلے کے لوگ بھی منزل شناس ہیں

آخر کہاں کا قصد ہے کھل کر بتائیے

بادہ کشوں کی اصل جگہ میکدے میں ہے

کس نے کہا کہ آپ بھی منبر پہ آئیے

اقبال عظیم

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(518) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Iqbal Azeem, Bas Ho Chuka Huzoor Yeh Parday in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Sad Urdu Poetry. Also there are 29 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.6 out of 5 stars. Read the Sad poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Iqbal Azeem.