Is Say Bhichar Ke Baab Hunar Band Kar Diya

اس سے بچھڑ کے باب ہنر بند کر دیا

اس سے بچھڑ کے باب ہنر بند کر دیا

ہم جس میں جی رہے تھے وہ گھر بند کر دیا

شاید خبر نہیں ہے غزالان شہر کو

اب ہم نے جنگلوں کا سفر بند کر دیا

اپنے لہو کے شور سے تنگ آ چکا ہوں میں

کس نے اسے بدن میں نظر بند کر دیا

اب ڈھونڈ اور قدر شناسان رنگ و بو

ہم نے یہ کام اے گل تر بند کر دیا

اک اسم جاں پہ ڈال کے خاک فرامشی

اندھے صدف میں ہم نے گہر بند کر دیا

عرفان صدیقی

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1170) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Irfan Siddiqui, Is Say Bhichar Ke Baab Hunar Band Kar Diya in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love Urdu Poetry. Also there are 69 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.2 out of 5 stars. Read the Love poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Irfan Siddiqui.