Tu Mere Sath Hatheeli Utha Nikaal Aaye

تو میرے ساتھ ہتھیلی اٹھا نکل آئے

تو میرے ساتھ ہتھیلی اٹھا نکل آئے

کوئی دعا نہ سہی بد دعا نکل آئے

کبھی کبھار اسے چوم لیں تو ممکن ہے

ہمارے منہ سے بھی شکر خدا نکل آئے

خبر کی تاک میں بیٹھے ہوئے تو چاہیں گے

کسی طرح سے کوئی واقعہ نکل آئے

یہی تو دکھ ہے قبیلہ بھی خاندان تھا ایک

مگر مزاج ہی اپنے جدا نکل آئے

مرے ہوؤں کی تلاشی میں ہو بھی سکتا ہے

کسی کی جیب سے اس کا پتہ نکل آئے

اٹھا رہا ہوں یہی سوچ کر زیاں پہ زیاں

کسی کی خیر کسی کا بھلا نکل آئے

مجھے خبر ہے کہ یہ لوگ لوٹ جائیں گے

اگر یہاں سے کوئی راستہ نکل آئے

نیا سفر ہو مبارک مگر کرو گے کیا

وہاں بھی ایسی ہی آب و ہوا نکل آئے

نکل رہا ہوں میں اس دل سے اس طرح ساحرؔ

کہ جیسے کاٹ کے قیدی سزا نکل آئے

جہانزیب ساحر

© UrduPoint.com

All Rights Reserved

(1010) ووٹ وصول ہوئے

Your Thoughts and Comments

Urdu Nazam Poetry of Jahanzeb Sahir, Tu Mere Sath Hatheeli Utha Nikaal Aaye in Urdu. This famous Urdu Shayari is a Ghazal, and the type of this Nazam is Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope Urdu Poetry. Also there are 22 Urdu poetry collection of the poet published on the site. The average rating for this Urdu Shayari by our users is 4.5 out of 5 stars. Read the Love, Sad, Social, Friendship, Bewafa, Heart Broken, Hope poetry online by the poet. You can also read Best Urdu Nazam and Top Urdu Ghazal of Jahanzeb Sahir.